Attitude Poetry|Best Attitude Poetry|Urdu Poetry

attitude poetry




کردار جن کے خود مرمت مانگ رہے ہیں 
نکلے وہ لوگ میری شخصیت بگاڑنے
Kirdar Jin K Khud Muramat Mang Rhy Hain
Nikly Wo Log Meri Shakhseyat Bigarny


ہم سے ہم کلام ہونا ہے تو آدب و احترام سے ہو 
لہجہوں کی سختیاں ہم منہ پے مار دیتے ہیں
Hum e Hum Kalam Hona Hai Tou Adab o Ehtram Se Ho
Lehjon Ki Sakhtiyan Hum Munh Pe Maar Dety Hain


اگر وہ چاہتی مجھکو۔۔۔۔۔۔۔تو اتنا کر  بھی  سکتی  تھی 
کہ دلہن غیر کی بننے سے پہلے مر بھی سکتی تھی
Agr Wo Chati Mujhko Tou Itna Kar Bhe Sakti Thi
K Dulhan Ghair Ki Banny Se Phly Mar Bhe Sakti Thi


ارے نہیں! مغرورنہیں ہوں میں
بس عزتِ نفس اور انا بہت عزیز ہے
Ary Nhi Magroor Nahi Houn Main
Bas Izat e Nafs Aur An,na Bht Azeez Hain


‏میں تعلق سنبھال لیتا ہوں 
    محترمہ آپ لہجہ سنبھالیے اپنا
Main Taluq Sambhal Laita Houn
Mohtarma Aap Lehja Sambhaliye Aapna


بھول جانے کا عارضہ ہے مجھے 
ویسے نام  کیا بتایا  تھا  آپ  نے 
Bhool Jany Ka Aarza Hai Mujhe
Weay Naam Kya Btaya Tha Aap Ne


یعنی اب لوگ سکھائیں گے, کہ کیسے دیکھوں 
میری مرضی, میں اُس شخص کو جیسے دیکھوں
Yeni Ab Log Sekhaein Ge,K Keasy Dekhun
Meri Marzi , Main ShakHS Ko Jeasy Dekhun



بات کا حل نِکالیئے صاحب
ایسے کیسے بھلا ، خدا حافظ
Baat Ka Hal Nikaliye Sahib
Aisy Keasy Bhala , Khuda Hafiz


تھی جتنی بساط کی پرستش

تم بھی تو کوئی خدا نہیں تھے

حد ہوتی ہے طنز کی بھی آخر

ہم تیرے نہیں تھے جا نہیں تھے

Thi Jitni Basaat Ki Purstish

Tum Bhe Tou Koi Khuda Nahi Thy

Had Hoti Hai Tanz Ki Bhe Akhir

Hum Tere Nahi Thy Ja Nahi Thy



اب مکافات عمل شروع ہوا
اب وہ جاگتی ہے اور میں سوتا ہوں
Ab Makafaat e Amal Shuru Hova
Ab Wo Jagti Hai Au Main Sota Houn


ﭘﮭﺮ ﮐﻮﻥ ﺑﮭﻼ ﺩﺍﺩ ﺗﺒﺴﻢ ﺍﻧﮩﯿﮟ ﺩﮮ ﮔﺎ
ﺭﻭﺋﯿﮟ ﮔﯽ ﺑﮩﺖ ﻣﺠﮫ ﺳﮯ ﺑﭽﮭﮍ ﮐﺮ ﺗﺮﯼ ﺁﻧﮑﮭﯿﮟ
Phr Kon Bhala Daade Tabasum Inhy Dega
Roen Gi Boht Mujh S e Bichar Kar Teri Ankhein


محترمہ رہنے دیجئے آپ محبت کو
آپ کو نیند بہت آتی ہے
Mohatrma Rehny Dijiye Aap Mohabbat Ko 
Aap Koooo Nend Booooht Aati Hai



مجھ کو ڈھنگ ہی نہیں نہ
آپ کیجیۓ بات کیسے کرتے ہیں
Mujh Ko Dhang Hi Nahi Na
Aap Kijiye Baat Keasy Karty Hain


انا جب بے تہا شہ ہو 
کہو پھر کیوں نہ تما شہ ہو
Anna Jab Be Tehasha Ho   
Kaho Phr Kioun Na Tamasha Ho


جو تیرے ساتھ رہتے ہوئے سوگوار ہو 
 لعنت ہو ایسے شخص پہ اور بے شمار ہو
Jo Tere Sath Rehty Hovy Sogwar Ho
Lanat Ho Aisy Shaks Pe Aur Be Shumar Ho


میں نے یکطرفہ محبت تو کبھی کی ہی نہیں

 وہ بھی چاہتی ہے برابر مجھ کو

Maine Yak Tarfa Mohabbat Tou Kabhi Ki Hi Nahi

Wo Bhe Chati Hai Barabar Mujh Ko



میرے  جینے کا طریقہ  تھوڑا  الگ  ہے یار

میں اُمید  پر  نہیں اپنی ضد  پر جیتا  ہوں

Mere Jeny Ka Tareqa Thora Alag Hai Yaar

Main Umeed Par Nhi Apni Zid Par Jeeta Houn



میری انا میں اتنی شدّت ھے کہ

میں آپ کی محبت پہ __ تھوک بھی سکتی ہوں

Meri Anna Mein Itni Shidat Hai K

Main Aapki Mohabbat Pe Thok Bhe Sakti Houn



مير ے مزاج کی شدت سے تم واقف ہو

ميں تمہيں اپنا بنا کر بھی چھوڑ سکتا ہوں

Mere Mizaj Ki Shidat Se Tum Waqif Ho

Main Tumhy Apna Bana Kar Chor Bhe Sakta Houn



اپنا کنگن سمجھ رہے ہو کیا

اور کتنا گھماؤ گے مجھ کو

Apna Kangan Smjh Rahy Ho Kya

Aur Kitna Gumhao Ge Mujhko



.پہلے جیسا نہیں رہوں گا میں

صلح بےکار ہے ہمارے بیچ

Phly Jeasa Nahi Rahun Ga Main

Sulah Be Kar Hai Humary Beech




4 Lines Poetry4 Lines Sad Poetry|4 Lines Shayari





بات یہ ہے کہ، تُو چاہتی ہے اسے
ورنہ_مجھ سے پیارا نہیں ہے وہ
Baat Ye Hai K,Tou Chati Hai Usy
Warna Mujh Se Peyara Nahi Hai Wo


کیا ضروری ہے کہ ہر بات کی تصدیق بھی ہو

وہ جو نزدیک نظر آتا ہے، نزدیک بھی ہو

تم اگر صاحب رائے ہو تو لازم تو نہیں!

تم جسے ٹھیک سمجھتے ہو، ٹھیک بھی ہو

Kya Zaroori Hai K Har Baat Ki Tasdeeq Bhe Ho

Wo Jo Nazdeeq Nazar Aata Hai,Nazdeeq Bhe Ho

Tum Agr Sahib e Ray Ho To Lazim Tou Nhi

Tum Jisy Theek Smjhty Ho,Theek Bhe Ho



اس نے اپنی انا کیلیے ہاتھ نہیں ملایا

پھر اس نے بہانا بھی وباء کا لگایا

Is Ne Apni An'na K Liye Hath Nahi Milaya

Phr Us Ne Bahana Nhe Waba Ka Lagaya



میں نے ردی سے نکال کر اس سے پوچھا

بتاؤ اس میں تمہارہ خط کونسا ہے

Maine Radi Se Nikaal Kar Is Se Poucha

Batao Is Mein Tumhara Khat Kon Sa Hai



کافی دنوں سے دیکھ رہا ہوں

وہ ہمیں ان دیکھا کر رہیں ہیں

Kafi Dinon Se Dekh Raha Houn

Wo Humen An Dekha Kar Rhy Hain



‏دیکھۓ! یوں نہ دیکھۓ ہمیں

دیکھۓ! پھر پگھل رہے ہیں آپ

Dekhiye Yhon Na Dekhiye Humen

Dekhiye Phr Pigal Rehy Hain Aap



کیا کر لو گی

اگر کلائی پکڑ لوں

Kya Kar Lo Gi

Agr Kalai Pakar Loun



جب  وہ شخص دل ہی سے اتر گیا

تو پھر کیوں سوچیں کہ کدھر گیا

Jab Wo Shakhs Dil Hi Se Utar Geya

Tou Phr Kioun Sochen K Kdhr Geya

Post a comment

0 Comments