Sad Poetry|Urdu Sad Poetry|Sad Shayari

sad poetry







تیری جدائی کا سن کے گھر والوں نے
تمام پنکھے اتار پھینکے ہیں
Teri Judai Ka Sun K Ghr Walon Ne
Tamam Phanky Utar Pehnken Hain


اپنی مشکل کا حل جو سوچا تو 
جا کے پنكھے پہ رک گئی آنکھیں
Apni Mushkil Ka Hal Jo Socha Tou
Ja K Phanky Pe Ruk Gai Aankhein


خاک ڈالو میرے مقدر پر
میں نے پتھر سے دل لگایا تھا
Khak Dalo Mere Muqadar Par
Maine Pathar Se Dil Lgya Tha


کسی سے مانگ کر لینی پڑے جو
ایسی مُحبت کا دُکھ سمجھتے ہو
Ksi Se Mang Kar Leni Pary Jo
Aisi Mohabbat Ka Dukh Smhjty Ho


میں اگر خود کو مار ڈالوں تو
کیا بچے گا تیری کہانی میں
Main Agar Khud Ko Maar Dalun Tou
Kya Bachy Ga Teri Kahani Mein


جیسا میرے ساتھ ہوا ہے ویسا اس کے ساتھ نہ ھو 
مختصر یہ کہ مکافاتِ عمل بھی معاف کیا
Jeasa Mere Sath Hova Hai Weasa Is K Sath Na Ho
Mohtasar Ye K Makafaat e Amal Bhe Mohaf Keya


منہ پھیرنے سے پہلے ذرا یہ تو سوچتے
آیا تھا تیرے پاس میں کس کس کو ٹال کر
Munh Pherny Se Phly Zara Ye Tou Sochty
Aya Tha Tere Paas Main Kis Kis Ko Taal Kar


تُو  رات  کے  پہلو  میں  ،  چمکتا   ھُوا   فانُوس
میں صبح کے بے فیض چراغوں کا ، دُھواں ھُوں
Tou Raat K Pelhlo Mein,Chamakta Hova Fanoos
Main Subhu K Be Faiz Charago Ka, Dhova Houn


تم محبت کے  اوائل ایام کی  مانند ہو
خوبصورت، دلچسپ اور جلد گزرنے والے
Tum Mohabbat K Awal Ayaam Ki Manid Ho
Khoburat,Dil Chasp Aur Jald Guzrny Waly


مرحلہ وار ربط ٹوٹا ہے
میں بتدریج بے وفا ہوا ہوں
Marhala Waar Rabt Toota Hai
Main Batdreej Bewafa Hova Houn


جو مجھے بہت پسند تھی
وہ خوشبو لگانا چھوڑدی اس نے
Jo Mujhy Boht Passand Thi
Wo Khushbo Lagana Chor Di Us Ne


حسرتیں کم ہی ہوں تو بہتر ہے
 چاند حاصل ہوجائے تو پھر چاند نہیں لگتا
Hasraten Kam Hi Hoon Tou Behtr Hai
Chand Hasil Ho Jaay Tou Phr Chand Nahi Lgta


یہ مقام بھی آتا ہے رابطوں میں ایک روز
کیا حال تمہارا؟میں ٹھیک ہوں،بات تمام شُد
    Ye Maqam Bhe Aata Hai Rabton Mein Aik Roz
Kya Haal Tumhara?Main Theek Houn,Baat Tamam Shud


‏ہم کسی اور سے منسوب ہوئے
کیا یہ نقصان  تمہارا  نہ ہوا ؟
Hum Kisi Aur Se Mansob Hovy
Kya Ye Nuqsan Tumhara Na Hova


Urdu Poetry|Urdu Sad Poetry, Ghazals, Shayari,2 Line Poetry


ﻣُﺠﮫ ﮐﻮ ﺟﻮ ﻣﯿﺴﺮ ﺗﮭﺎ ، ﺳﻨﮓ ﻟﮯ ﮔﯿﺎ ﮬﮯ ﺗُﻮ
ﯾﻌﻨﯽ ﻣﯿﺮﮮ ﺟﯿﻮﻥ ﺳﮯ ، ﺭﻧﮓ ﻟﮯ ﮔﯿﺎ ﮬﮯ ﺗُﻮ
Mujh Ko Jo Muyasar Tha,Sang Le Geya Hai Tou
Yeni Mere Jewan Se,Rang Le Geya Hai Tou


کچھ دن بہت خوش رہا  تھآ  میں 
اب اس خوشی کا قرض اتار رہا  ہوں
Kuch Din Bht Khush Raha Tha Main
Ab Is Khushi Ka Qarz Utaar Raha Houn


میں نے رسما کہا کہ  میں جاؤں
اس نے فورا بولا مناسب ہے
Maine Rasman Kaha Ke Main Jaun
Us Ne Foran Bola Munsaib Hai


تجھے کیا فرق پڑتا ہے، مزے کر  
میرا غم ہے نہیں جاتا نہ جائے
Tujhy Kya Farq Parta Hai , Mazy Kar
Mera Ghum Hai Nhi Jata , Na Jay


ہم خود ہی اُتر آئے تیرے دستِ طلب پر 
ہم جیسے پرندوں نے کدھر جانا تھا آخر
Hum Khud Hi Utar Aay Tere Dast e Talab Par
Hum Jeasy Parindon KiKdhr Jana Akhir


بات کا حل نِکالیئے صاحب
ایسے کیسے بھلا ، خدا حافظ
Baat Ka Hal Nikaliye Sahib
Aisy Keasy Bhala , Khuda Hafiz


مجھ سے میری عمر کا خسارہ پوچھتے ہیں 
یعنی کہ لوگ مجھ سے تمہارا پوچھتے ہیں
Mujh Se Meri Umar Ka Khasara Pouchty Hain
Yeni K Log Mujh Se Tumhara Pouchty Hain


توجہ کی جو بھیک مانگ رہا تھا تم سے
وہ اپنے گھر کا سب سے لاڈلا لڑکا تھا
Tawaja Ki Jo Bhek Mang Raha Tha Tum Se
o Aone Ghr Ka Sab Se Ladla  Larka Tha


ﭘﮭﺮ ﮐﻮﻥ ﺑﮭﻼ ﺩﺍﺩ ﺗﺒﺴﻢ ﺍﻧﮩﯿﮟ ﺩﮮ ﮔﺎ
ﺭﻭﺋﯿﮟ ﮔﯽ ﺑﮩﺖ ﻣﺠﮫ ﺳﮯ ﺑﭽﮭﮍ ﮐﺮ ﺗﺮﯼ ﺁﻧﮑﮭﯿﮟ
Phr Kon Bhala Daade Tabasum Inhy Dega
Roen Gi Boht Mujh S e Bichar Kar Teri Ankhein


میرے چہرے پر لکھے ہیں ان گنت پچھتاوے
         ایک تمہارے نام کا اور سہی
Mere Chery Pr Lekhy Hain An Gint Pachtawy
         Aik Tumhary Naam Ka Aur Sahiiiiii


وہ تو کل دیر تلک دیکھتا ایدھر کو رہا
ہم سے ہی حال تباہ اپنا دکھایا نہ گیا
Wo To Kal Dair Talak Dekhta Idhr Ko Raha
Hum Se Hi Haal Tabah Apna Dekhaya Na Geya


کون سیکھا ہے صرف باتوں سے
سب کو اک حادثہ ضروری ہے
Kon Sekha Hai Sirf Baton Se
Sab Ko Aik Hai Hadsa Zaroori Hai


میرے ہونے سے جو بڑھتے ہیں مسائل ان کے
      میں جو مر جاؤں تو سہولت ہوگی
Mere Hone Se Jo Bharty Hain Masail In K
Main Jo Mar Jaun To Sahulat Ho Gi
 

Love Poetry|Urdu Poetry About Love|Urdu Poetry For Love



بیٹھ کر سایہ گل میں ناصر
ہم بہت روئے جب وہ یاد آیا
Beith Kar Saya e Gull Mein Nasir
Hum Boht Roy Jab Wo Yaad Aya


مِنَّتیں_مَنَّتیں _تعویذ_مناجات__سفر
ایک انساں کے لیئے اتنے جتن ،،، ٹھیک نہیں
Minatein_Manatein_Taweez_Manajat_Safar
Aik Insan Ky Liye Itny Jatan.....Theek Nahi


یہ جو خاموش رہا کرتا ھوں اکثر اب مَیں
مَیں نے اک شخص کی آواز پہ بیت کی ھے
Ye Jo Khamosh Raha Karta Houn Aksar Ab Main
Maine Aik Shakhs Ki Awaz Ki Bait Ki Hai


‏کر کے آمادہ کوئی شخص سفر پر مُجھ کو 
اپنا رستہ میری دہلیز پہ دھر جاتا ھے۔
Kar K Aamada Koi Shakhs Safar Par Mujh Ko
Apna Rasta Meri Dehkeez Pe Dahr Jata Hai


یہ حاصل ہے مِری خاموشیوں کا
کہ پتھر آزمانے لگ گئے ہیں
Ye Hasil Hai Meri Khamoshiyon Ka 
K Pathar Azmany Lag Ge Hain


خود پرستی کا نشہ جب اتر جائے گا
وہ مجھے ڈھونڈنے ہر جگہ جائے گا
Khud Paasti Ka Nasha Jab Utar Jay Ga
Wo Mujhy Dhondny Har Jaga Jaay Ga


اتریں گلے سے گھونٹ نہ آبِ حیات کے
دل آہ زندگانی سے کتنا خفا ہے آج
Utren Galy Se Ghont Na Aab e Hayat K
Dil Aa Zindagani e Kitna Khafa Hai Aaj


میں پارسا نہیں ہوں، کردار کش سے کہنا
ہے داغ دل لگی کا، میلا ہے میرا دامن
Main Parsa Nahi Houn,Kirdar Kash Se Kehna
Hai Daag Dil Lagi Ka,Meyla Hai Mera Daman


شام آئے اور گھر کے لیے دل مچل اُٹھے 
شام آئے اور دل کے لئے کوئی گھر نہ ہو۔
Sham  Aay Aur Ghr K Liye Dil Machal Uthy
Sham Aay Aur Dil K Liye Ghr Koi Ghr Na Ho 


ﺍﻥ ﮔﻨﺖ ﺯﺧﻢ ﺍﺏ ﺑﻬﯽ ﺗﺎﺯﮦ ﮨﯿﮟ
ﮐﻮﻥ ﮐﮩﺘﺎ ﮨﮯ___ ﻭﻗﺖ ﻣﺮﮨﻢ ﮨﮯ
An Gint Zakhm Ab Bhe Taza Hain
Kon Kehta Hai WAQT Marham Hai


یہ مجھ غریب پہ کچھ خاص عنایت ہے تری ؟
یا  ھر  کسی  کے  لیے  تیرا  جنوں  ایسا  ھے
Ye Mujh Ghareeb Pe Kuch Khas Anayat Hai Teri
Ya Har Ksi K Liye Tera Janoon Aisa Hai


یاد  رکھنا  ہماری  تربت  کو 
قرض ہے تم پہ چار پھولوں کا
Yaad Rakhna Humari Turbat Ko
Qarz Hai Tum Pe Chaar Pholoon Ka


میں دیکھ ہی نہیں سکا جاتے ہوے اسے
گاڑی چلی اور آنکھ میں تنکا چلا گی
Main Dekh Hi Na Saka Jaty Hovy Usy
Gari Chali Aur Ankh Mein Tinka Chala Geya


زندگی تجھ سے بھی نہیں شکوہ 
ساتھ تُو بھی رہے گی پر کب تک
Zindagi Tujh Se Bhe Nhi Shikwa
Sath Tou Bhe Ry Gi Par Kab Tak 


آواز دے کے دیکھ لو شاید وہ مل ہی جائے

ورنہ یہ عمر بھر کا سفر رائیگاں تو ہے

Awaz De K Dekh Lo Shayad Wo Mil Hi Jaay

Warna Ye Umar Bhr Ka Safar Raigaan Tou Hai



پھر جی میں ہے کہ در پہ کسی کے پڑے رہیں  

سر  زیرِ  بارِ  منت ِ  درباں  کیے  ہوئے

Phr Ji Main Hai K Dar Pe Ksi K Pary Rahen

Sar Zeyr e Baar e Minat e Darbaan Kiye Hovy



‏ہر کوئی اپنی ہی آواز سے کانپ اٹھتا ہے

ہر کوئی اپنے ہی سائے سے ہراساں ...جاناں

Har Koi Apni Hi Awaz Se Kanp Uthta Hai

Har Koi Apne Hi Saay Se Harasaan Janaan



مرے حبیب مری مسکراہٹوں پہ نہ جا

خدا گواہ مجھے آج بھی ترا غم ہے

Mere Habib Meri Muskaraon Pe Na Ja

Khuda Gawa Mujhy Aaj Bhe Ghum Tera Hai



اپنے حال پر مطمئن رہیے

موازنہ سکون چھین لیتا ہے 

Aapne Haal Par Mutmain Rehiye

Muwazna Sakoon Cheen Leta Hai



برسوں بعد دیکھا اسے چھت پر

وہ آئی تھی اپنے بچوں کے کپڑے سوکھانے

Barson Bad Dekha Usy Chat Pe

Wo Aai Thi Apne Bachon K Kapry Sokhany



اس کا لہجہ بتا گیا مجھے

وہ قبول تھا اسے وہ جیسا بھی تھا

Uska Lehja Bataya Geya Mujhe

Wo Qabol Tha Isy Wo Jeasa Bhe Tha



میرے دکھ بھرے خط اوروں کو دکھاکر

اب وہ مجھ سے اور خطوں کی امید لگائے بیٹھے ہیں

Mere Dukh Bhry Khat Auron Ko Dekha Kar

Ab Wo Mujh Se Aur Khaton Ki Umeed Lga Beithy Hain



آپ آ بھی نہیں سکتے_

میری موت کا اتنا صدمہ ہوا آپ کو

Aap Aa Bhe Nahi Sakty

Meri Mout Ka Itna Sadma Hova Aapko



اس نے مجھے پڑھائی کے لیئے چھوڑا

پھر وہ پڑھ لکھ کے بھی دلہن ہی بنی

Us Ne Mujhy Parhai K Liye Chora

Phr Wo Parh Lekh K Bhe Dulhan Hi Bani



کئی لڑکیوں کو دوکھا دیتے ہیں

کئی لڑکیوں کے لاڈلے بھائی

Kahen Larkiyon Ko Dhoka Dety Hain

Kahen Larkiyon K Ladly Bhai



جب ملے گی اسے خبر میری

وہ ہاتھوں پر مہندی لگوا رہی ہوگی

Jab Mily Gi Usy Khabar Meri

Wo Hathon Par Mehndi Lagwa Rhi Hogi



بات انا یا ضد کی نہیں ہے

اس نے بولایا ہی نہیں میں کیسے جاتا شادی پر

Baat  An'na Ya Zid Ki Nahi Hai

Us Ne Bolaya Hi Nahi Main Keasy Jata Shadi Par



بے بسی مار دیتی ہے ورنہ

جینا تو ہر شخص چاہتا ہے

Be Basi Maar Deti Hai Warna

Jeena Tou Har Shakhs Chata Hai



میں تو وہ ہوں کہ جس کا دل دھڑکنا

 چھوڑ بھی دے تو کوئی رونے والا نہیں

Main Tou Wo Houn K Jis Ka Dil Dharakna

Chor Bhe De Tou Koi Rony Wala Nahi



جس کو تصویر دکھاتا ہوں یہی کہتا ہے

تیرا نقصان تو پورا نہیں ہونے والا

Jis Ko Tasveer Dekhata Houn Yehi Kehta Hai

Tera Nuqsan Tou Pura Nhi Hony Wala



یہ میری داستان تھی محترمہ

تم نے تالی بجا کر تماشا بنا دیا

Ye Meri Dastan Thi Mohtarma

Tum Ne Tali Baja Kar Tamasha Bana Deya



وہ کسی اور ہی الجھن میں پڑی تھی شاید

اور میں سمجھا اسے  میری  پریشانی  ہے

Wo Ksi Aur Hi Uljan Mein Pari Thi Shayad

Aur Main Smjha Isy Meri Pareshani Hai



میاں وجود کے نشے 

ہمیشہ اُتر  ہی جاتے ہیں

Miyan Wajod K Nashy

Hamesha Utar Hi Jaty Hain



تینوں آکھیا سی، مینوں پیار نہ کر

تُو بھُل جانا، اساں رُل جانا

Teno Aakhiya Si,Meyno Peyar Na Kar

Tou Bhul Jana,Asaan Rul Jana



سٙر پٹختا ہے ......... لفظ لفظ میرا 

اب نہ سمجھے کوئی تو کیا کیجیئے

Sar Patkhata Hai Lafz Lafz Mera

Ab Na Smjhy Koi Tou Kya Kijiye

Post a comment

0 Comments