Urdu Poetry|Urdu Sad Poetry,Ghazals,Shayari,2 Line Poetry

urdu poetry




محترمہ رہنے دیجئے آپ محبت کو
آپ کو نیند بہت آتی ہے
Mohatrma Rehny Dijiye Aap Mohabbat Ko 
Aap Koooo Nend Booooht Aati Hai


تیری جدائی کا سن کے گھر والوں نے
تمام پنکھے اتار پھینکے ہیں
Teri Judai Ka Sun K Ghr Walon Ne
Tamam Phanky Utar Pehnken Hain


ہم خود ہی اُتر آئے تیرے دستِ طلب پر 

ہم جیسے پرندوں نے کدھر جانا تھا آخر

Hum Khud Hi Utar Aay Tere Dast e Talb Par

Hum Jeasy ParindonNe Kdhr Jana Tha



دونوں عشاء پڑھ کے سویا کرینگے
یہ خواب تھے محترمہ کے
Dono Isha Parh K Soya Karen Ge
Ye Khawab Thy Mohtarma K


Sad Poetry|Urdu Sad Poetry|Sad Shayari




‏ہم کسی اور سے منسوب ہوئے
کیا یہ نقصان  تمہارا  نہ ہوا ؟
Hum Kisi Aur Se Mansob Hovy
Kya Ye Nuqsan Tumhara Na Hova


شکوہ اول تو بے حساب کیا
اور پھر بند ہی یہ باب کیا
Shikwa Awal Tou Be Hisab Keya
Aur Phr Band Hi Ye Baab Keya



خود پرستی کا نشہ جب اتر جائے گا
وہ مجھے ڈھونڈنے ہر جگہ جائے گا
Khud Paasti Ka Nasha Jab Utar Jay Ga
Wo Mujhy Dhondny Har Jaga Jaay Ga


مجھ کو ڈھنگ ہی نہیں نہ
آپ کیجیۓ بات کیسے کرتے ہیں
Mujh Ko Dhang Hi Nahi Na
Aap Kijiye Baat Keasy Karty Hain


اتریں گلے سے گھونٹ نہ آبِ حیات کے
دل آہ زندگانی سے کتنا خفا ہے آج
Utren Galy Se Ghont Na Aab e Hayat K
Dil Aa Zindagani e Kitna Khafa Hai Aaj


‏میں تعلق سنبھال لیتا ہوں 
    محترمہ آپ لہجہ سنبھالیے اپنا
Main Taluq Sambhal Laita Houn
Mohtarma Aap Lehja Sambhaliye Aapna


انا جب بے تہا شہ ہو 
کہو پھر کیوں نہ تما شہ ہو
Ana Jab Be Tahasha Ho   
Kaho Phr Kioun Na Tamasha Ho



میں نے اُتار کر رکھ دی ھے ، پیروں سے پائل

چھنکتی ہے تو لگتا ھے اسکو آواز دیتی ھے

Maine Utar Kar Rakh Di Hai Peron Se Payal

Chanakti Hai Tou Lagta Hai Usko Awaz Deti Hai



Urdu Mohabbat Poetry|Mohabbat Poetry|Best Mohabbat Poetry




تمکو واپس بُلا رہا ہے یہ دل

کیا کوئی التجا ضروری ہے

Tum Ko Wapis Bula Raha Hai Ye Dil

Kya Koi iLteja Zaroori Hai



تیری موجودگی _ منانی ہے 

چھوڑ شکوے اب دکھائی دے

Teri Moujudgi Manani Hai

Chor Shikwy Ab Dekhai De



وہ محلوں کی خواہشمند ہو گئی

جس کےلئے اپنے گھر کی دیواریں اونچی کی میں نے

Wo Mehlon Ki Khawaish Mand Ho Gai

Jis K Liye Aapne Ghr Ki Dewarein Unchi Ki Maine



میں نے تو سوچا بھی نہیں تھا

وہ آئے گی اتنا بن سنور کے میری شادی پر

Maine Tou Socha Bhe Nahi Tha

Wo Aay Gi Itna Ban Sanwar K Meri Shadi Par



اس کی ماں مجھ سے اعتراض کرتی ہے

تم نے میری بیٹی کو تعویز ڈال دیئے ہیں

Iski Maa Mujh Se Iteraz Karti Hai

Tum Ne Meri Beti Ko Taveez Daal Diye Hain



جب اس کا اپنا گھر بس گیا

مجھے گاؤں کا آوارہ لڑکا کہنی لگ گئی وہ

Jab Uska Aapna Ghr Bas Geya

Mujhe Gawon Ka Awara Larka Kehny Lgi Wo



خواہش پوری جو نا ہوئی

تو لڑکی بے وفا ہے

Khawaish Pori Jo Na Hoi

Tou Larki Be Wafa Hai



طبیب بھی کیا سوچتا ہوگا

کہ،ایک دیدار سے ہزار دوائیں بیکار ہیں

Tabeeb Bhe Kya Sochta Hoga

K,Aik Deedar Se Hazar Dawaen Bekar Hain



رہنے دیجئے آپ سے نہیں آیا جائے گا 

میرے گاؤں کی گلیاں کچی ہیں

Rehny Dijiye Aap Se Nahi Aya Jaay Ga

Mere Gaown Ki Galiyan Kachi Hain



جان میں جان آ گئی یاروں

وہ کسی اور سے خفا نکلا

Jaan Mein Jaan Aa Gai Yaro

Wo Kisi Aur Se Khafa Nikla



یہ دنیا کس کی ہوئی ہے 

جو ہماری ہوگی

Ye Duniya Ki Ki Hoi Hai

Jo Humari Hogi


روحیں اداس ہیں 

جوان نسلوں کی

Rohen Udas Hain

 Jawan Naslon Ki



وہ روتی ہے تہجد میں کسی اور کے لئے

یا الہی میری دعاوُں کا کیا ہو گ

Wo Roti Hai Tahajad Mein Ksi Aur K Liye

Ya Elahi Meri Duaon Ka Kya Hoga



وہ دیکھ کر جل گئی

میری دلہن کا قد اس سے بڑا تھا

Wo Dekh Kar Jal Gai

Meri Dulhan Ka Qad Us Se Bara Tha

Post a comment

0 Comments